اپوزیشن جماعتوں کی اے پی سی، 25 جولائی کو یوم سیاہ منانے کی تجویز

0
75

اسلام آباد(اے ون نیوز) حکومت کو ٹف ٹائم دینے کے لیے اپوزیشن جماعتوں کی آل پارٹیز کانفرنس (اے پی سی) جاری ہے اور 25 جولائی کو یوم سیاہ منانے کی تجویز پر غور کیا جارہا ہے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق اسلام آباد میں جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی سربراہی میں اپوزیشن کی آل پارٹیز کانفرنس کا تلاوت کلام پاک سے آغاز ہوا۔ کانفرنس میں جماعت اسلامی کے سوا تقریبا تمام اپوزیشن جماعتیں شرکت کر رہی ہیں۔ پیپلزپارٹی، مسلم لیگ (ن)، عوامی نیشنل پارٹی اور قومی وطن پارٹی کے وفود اے پی سی میں شریک ہیں۔

مسلم لیگ (ن) کے وفد میں شہبازشریف، مریم نواز، شاہد خاقان عباسی، ایاز صادق، احسن اقبال، مرتضیٰ جاوید عباسی، مریم اورنگزیب، راناثنااللہ اور دیگر شامل ہیں۔ پی پی پی کی طرف سے بلاول بھٹو زرداری، یوسف رضاگیلانی،شیری رحمان، رضاربانی، نیّربخاری، فرحت اللہ بابر شرکت کررہے ہیں۔ میر حاصل بزنجو کی سربراہی میں نیشنل پارٹی کا وفد جبکہ ایم ایم اے کے ساجد میر اور دیگر رہنما اے پی سی میں شرکت کررہے ہیں۔
اے پی سی میں حکومت مخالف تحریک اور بجٹ منظوری رکوانے پر مشاورت کی جارہی ہے جب کہ اسلام آبادلاک ڈاؤن کی تجویزاورجلسوں کا شیڈول بھی زیرغور ہیں۔ مولانا فضل الرحمان نے 25 جولائی کو ملک بھر میں یوم سیاہ منانے کی تجویز دیتے ہوئے کہا کہ 25 جولائی 2018 کو عام انتخابات میں بدترین دھاندلی ہوئی، اس لیے 25 جولائی کو ملک بھر میں یوم سیاہ کے طور پر منانا چاہیے۔ مولانا کی تجویز پر اے پی سی میں غور کیا جارہاہے۔

دوسری جانب حکومتی ٹیم نے بی این پی مینگل کو بجٹ کی حمایت کے لیے منالیا ہے اور اختر مینگل نے اپوزیشن کی اے پی سی میں شرکت نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here