دنیا کا امیر ترین آدمی کتنا عرصہ پاکستان کا خرچہ چلاسکتا ہے؟

0

لندن(اے ون نیوز)دنیا بھر میں غربت دور کرنے کے لیے کام کرنے والے ادارے آکسفیم نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ دنیا کے 8 امیر ترین افراد کے پاس اتنی دولت ہے جو دنیا کی آدھی آبادی کی دولت کے برابر ہے۔یہ تفصیلات دنیا بھر میں غربت کم کرنے کے لیے کام کرنے والے ادارے آکسفیم نے اکٹھی کی ہیں۔

اس سے پہلے مشہور بین الاقوامی میگزین فوربز نے دنیا کے امیر ترین افراد کی فہرست جاری کی تھی جس کے مطابق دنیا کے امیر ترین شخص ای کامرس کمپنی امیزون کے جیف بیزوس ہیں جن کے پاس کل دولت 131 ارب امریکی ڈالر ہے۔

دوسرے نمبر پر بل گیٹس ہیں جن کے اثاثے ساڑھے 96 ارب ڈالر ہیں اور وہ اپنے اثاثوں میں سے تقریباً 36 ارب ڈالر اپنی فلاحی تنظیم کو عطیہ کر چکے ہیں ورنہ وہ اور بھی امیر ہوتے۔

60 سے زائد کمپنیوں کے مالک وارن بوفیٹ ساڑھے 82 ارب ڈالر کے ساتھ تیسرے نمبر اور کرسچن ڈایور سمیت کئی لگژری آئٹمز بنانے والی کمپنیوں کے مالک بغناغد آغنوت 76 ارب ڈالر کے ساتھ چوتھے نمبر پر ہیں۔

میکسیکو کے کارلوس سلم پانچویں، اسپین کے امینسیو اورٹیگا چھٹے اوریکل کے لیری ایلیسن ساتویں اور فیس بک کے مارک زُکربرگ آٹھویں نمبر پر ہیں۔

آکسفیم کے مطابق دنیا میں 1810 ارب پتی موجود ہیں جن کے پاس موجود دولت دنیا کے 70 فیصد افراد کے برابر ہے۔ دنیا کی آدھی غریب ترین آبادی میں سے 80 فیصد افریقا اور بھارت میں رہتے ہیں۔

دنیا کے امیر ترین آدمی جیف بیزوس اپنی دولت سے پاکستان بھر کا 3 سال کا بجٹ چلا سکتے ہیں تاہم وہ اپنی تمام تر دولت کے ساتھ امریکا کو صرف 5 دن چلا پائیں گے۔اخبار اکنامک ٹائمز کے مطابق بھارت کے امیر ترین آدمی مکیش امبانی سارے بھارت کا 20 دن کا خرچہ اٹھا سکتے ہیں۔

چین کے امیر ترین آدمی علی بابا کے جیک ما چین کا 4 دن کا خرچہ چلا سکتے ہیں جبکہ سعودی عرب کے شہزادہ الولید چاہیں تو اپنے ملک کا خرچہ 26 دن تک چلا سکتے ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here