فرانس میں اللہ اکبر کے نعرے لگاتے نوجوان نے 3افراد کے سر قلم کر دئے،متعدد زخمی

0

پیرس(اے ون نیوز) فرانسیسی شہر نیس میں ایک نامعلوم حملہ آور نے چاقو سے وار کرکے کم از کم تین افراد کو قتل جبکہ کئی دوسرے افراد کو زخمی کردیا ہے۔نیس شہر کے میئر نے اسے دہشت گردی قرار دیتے ہوئے سخت الفاظ میں مذمت کی ہے۔ یہ واقعہ فرانس کے شہر نیس میں نوٹرے ڈیم چرچ کے قریب پیش آیا۔

شہر نیس کے میئر کرسچیان ایستروسی نے صحافیوں کو بتایا کہ حملہ آور نے ایک عورت کا سر کاٹ دیا اور وہ مسلسل ’’اللہ اکبر‘‘ کے نعرے لگا رہا تھا۔ انہوں نے کہا کہ قتل ہونے والوں میں سے ایک شخص نوٹرے ڈیم چرچ کے نگرانوں میں بھی شامل تھا۔پولیس نے حملہ آور کو حراست میں لے لیا ہے، تاہم ابھی تک اس کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی ہے۔ جائے وقوعہ اور ارد گرد کا تمام علاقہ سیل کردیا گیا ہے جبکہ مزید کارروائی جاری ہے۔

دوسری جانب فرانسیسی وزیرِ داخلہ جیرالڈ درمانین نے ٹویٹ کیا ہے کہ وہ ہنگامی بحرانی اجلاس بلا رہے ہیں جبکہ عوام کو خبردار کیا کہ وہ حملے کی جگہ جانے سے گریز کریں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here