مارکو پولوکےشہر وینس میں……. ارشد نذیر ساحل ،بارسلونا

0

صبح چھ بجے میں اوربرادرم منصورحیدر وینس جانے کےلئے بارسلونا ایئر پورٹ پہنچے تو ٹھنڈی ہوا اوردرجہ حرارت چار تھا دو گھنٹے کی فلائٹ سےہم ساڑھے نوبجے معروف اطالوی سیاح مارکو پولو کے کے شہر” مارکو پولو ایئر پورٹ” وینس پہنچے ،وینس جانے کی ہماری خواہش تو تب سے تھی جب ہمارے پسنددیدہ شاعراحمد فراز سے مقتدرہ قومی زبان اسلام آباد میں دوران ملاقات وینس کے حوالے سے کلام سنا تھا ،ان کی خوبصورت غزل کا ایک شعروینس کا تذکرہ کچھ یوں کرتا ہے

میں بھی پھِرا ہوں کشتئ عمرِ رواں لیے
وینس کا سارا شہر کھلے پانیوں میں تھا

اس سے پہلے کہ ہم ایئر پورٹ سے نکل کر وینس مرکزی شہر کے لئے بس میں سوار ہوتے اٹالین پولیس کےتین جوانوں نےہمیں گھیر ااور چیکنگ ایریا میں لے گئے۔ پونے گھنٹے کی سخت پوچھ پڑتال ریذیڈنسی پاسپورٹ پرس موبائل فون اور بیگ چیکنگ کے بعد بھی ہمیں مشکوک نظروں سے یوں الوادع کیا،جیسے کہ ہم انٹر پول کو مطلوب کوئی دہشت گردیا اسمگلر ہوں ۔

وینس ایئر پورٹ سے بذریعہ بس چالیس منٹ کی مسافت پرہم اٹلی کے شمال مشرق میں واقع پانیوں ، پلوں اور جزیروں کےطلسماتی شہر وینس پہنچے،وینس اٹلی کا خوبصورت اورقابل دید تاریخی شہر ہے ۔

صدیوں سے پانی میں ڈوبے ہونے کی وجہ سے یورپ کامصروف ترین سیاحتی مرکز ہےاسکی تاریخی اہمیت اپنی جگہ مگر 1987سے وینس کا کچھ قدیم حصہ یونیسکو کی ثقافتی میراث میں بھی شامل کر لیا گیاہے ۔وینس میں سارا سال ہی سیاحوں کارش رہتا ہےاور یہاں آپ ہر رنگ و نسل کے لوگ شہر کی خوبصورتی سے لطف اندوز ہوتے دیکھ سکتے ہیں،چارسو پلوں اور ایک سو اٹھارہ سے زائدجزیروں پر مشتمل پانی پہ تیرتےاس رومانوی شہر کی خوبصورتی کو لفظوں میں بیان کرنا بہت مشکل ہے ویسے تو مارکوپولوکے اس دلفریب شہر کو کشتیوں کی مدد سے یا پیدل چل کر چند ہی گھنٹوں میں دیکھا جا سکتا ہے لیکن قدرت نے اس شہر کو جو خوبصورتی اوردلفریب رنگ عطا کیے ہیں ان کوبیان کرنے کےلئے بہت سا وقت درکار ہے۔

وینس ایسا طلسماتی شہر ہے کہ آپ ایک پل کراس کریں تو دوسرے محلے میں پہنچ جاتے ہیں اور درمیان میں ندیاں آپ کے سنگ سنگ اٹکھیلیاں کرتے ہوئےچلتی ہیں ،وینس کے ہر محلے اور پل کی اپنی ہی خوبصورتی اور ایک تاریخی داستان ہے ۔

پورے شہر میں ہر طرف ہر گھر کے آگے آپ کو رنگ برنگی کشتیاں نظر آئیں گی میٹر و ٹرام یا بس سروس کی جگہ سواریوں کو اتارتی ہوئی بھی واٹر بس ہی ملے گی اور گنڈولہ کشتی والےہر گلی کی نکر پہ سواری کے لئے روایتی لباس میں آپکودعوت دیتے نظر آئیں گے،گنڈولہ پہ سیر کروانے والےملاح ناصرف اہم مقامات کی تاریخ آپ کو بتائیں گے بلکہ اپنے روایتی گیت بھی سنائیں گے ،سیاحوں کوہر سٹاپ پہ اتارتی پبلک موٹر بوٹ جس کا پچھتہر منٹ کاکرایہ صرف ساڑھے سات یورو ہے ،گنڈولہ کو آپ اسی سے سو یورو تک بک کر کے وینس کے مشہور حصوں کی سیاحت سے لطف اندوز ہو سکتے ہیں ، شہر میں چھوٹی بڑی گلیوں میں ہر طرف دوڑتی سیاحوں اور سامان سے لدی مختلف سائز و رنگ کی خوبصورت کشتیاں بہت منفرد اور خوبصورت منظر پیش کر رہی ہوتی ہے۔

وینس شہر کا ہر جزیرہ ہی خوبصورت اور اپنے اندر ایک تاریخی داستانیں سموئے ہوئے ہے ،خوبصورت طرز تعمیر پر مشتمل رنگ برنگے مکانات ،محلات اور مکانوں کے آگے کھڑی گنڈولہ کشتیاں اور دروازوں کے آگے رکھے ہوئے گھملے، گھملوں میں کھلے خوشبوؤں بھرےرنگ برنگے پھول خوبصورت منظر پیش کر رہے ہوتے ہیں ۔وینس کی کئی پرکشش عمارتوں اور پلوں کی طرز تعمیر توچودویں صدی کی تعمیر کا بہترین نمونہ نظر آتی ہیں ۔ہر ایک پل پہ سیاحوں کا رش ہوتاہے اور بعض اوقات تواپنے من پسند منظر پہ تصویر بنانے کےلئے بہت ساانتظار بھی کرنا پڑتا ہے؟سیاح شہر کے دلکش مناظراور پانی پہ تیرتے گنڈولوں اورتاریخی محلات کو اپنے موبائل اور کیمروں میں محفوظ کر رہے ہوتے ہیں شہرکے درمیان میں گاہےبگاہے کچھ گراونڈ اسکوائر اور چرچ بھی ہیں

مین اسکوائرکے ساتھ ہی شہرکامشہورتاریخی چرچ سانتا ماریہ ہے ،جہاں سیاحوں کارش بہت زیادہ ہوتا ہے،مین اسکوائیر کی طرف جانے والے راستے میں چھوٹے چھوٹے بازار بھی آتے ہیں جہاں سیاح اٹالین پیزہ ،سمندری فوڈ ،کافی اوردیگرروایتی کھانوں اور مشروبات سے لطف انداز ہو تے نظر آتےہیں ، اور شہر کے مقامی تحفے،رنگ برنگے نقاب ،شہرکےقابل دید مقامات کی تصاویر ،وینس کے بنے ہوئے شیسے اور مٹی سے بنے رنگ برنگےبرتن اور دیگر اشیاخرید رہے ہوتے ہیں ،وینس کا ایک جزیرہ مورابو توظروف سازی کے لئے دنیا بھر میں مشہور ہے جہاں پر بہت سے رنگ برنگے شیشے کے بنے جارگلاس اور برتن اپنی بہار دکھا رہے ہوتے ہیں

پورے دن کی سیاحت میں ہمیں وینس میں کوئی پاکستانی تو نہیں مل سکا مگر یہ دیکھ کے خوشی ہوئی کہ بنگالیوں کی بڑی تعداد وینس میں سیویئنرزشاپ ،جنرل اسٹورز شوارماپیزہ اور دیگر کاروبا سے وابستہ ہیں اور نوجوان کی بڑی تعداد ہوٹلوں میں کام کررہی ہے۔

بلاشعبہ وینس دنیائے سیاحت کے ماتھے کا جھومر ہے۔آپ ایک بار وینس کی سیر کریں گے تواس کی کشش اور فضا میں پھیلا رومان آپ کے ذہن اوردل میں ہمیشہ کے لئے محفوظ ہو جائے گا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here