مہوش حیات پی پی چیئرمین بلاول بھٹو سے شادی کے لیے تیار

0

لاہور(اے ون نیوز)اداکارہ مہوش حیات ہمیشہ اپنے بولڈ بیانات، اداکاری، ویڈیوز اور تصاویر کی وجہ سے خبروں میں رہتی ہیں۔کچھ دن قبل ہی انہوں نے ایک انٹرویو میں بھی کھل کر باتیں کی کہ انہیں کس طرح کے مرد حضرات پسند ہیں اور وہ حقیقی زندگی میں رومانس کے کتنے قریب ہیں؟

مہوش حیات نے اسٹریمنگ چینل ناشپاتی پرائم کے پروگرام ’بائے دی وے‘ میں میزبان بیگم نوازش سے اپنے پسندیدہ اداکاروں، کیریئر میں کامیابی اور ذاتی زندگی سے متعق کھل کر بات کی۔مختصر دورانیے کے انٹرویو میں مہوش حیات نے بتایا کہ وہ اپنی والدہ کی دعاؤں کی وجہ سے اس منزل تک پہنچی ہیں، کیوں کہ انہیں یقین ہے کہ ماں کی دعائیں بڑی سے بڑی آفت کو جہاں ٹال دیتی ہیں، وہیں نئے راستے بھی کھول دیتی ہیں۔

ابھی تک اکیلی کیوں ہیں؟ کے سوال کے جواب میں مہوش حیات نے بتایا کہ انہیں واقعی آج تک کوئی محبت کرنے والا مرد نہیں ملا۔اداکارہ نے وضاحت کی کہ شاید اس کا سبب یہ ہو کہ انہوں نے پیار کے لیے وقت ہی نہ نکالا ہو اور وہ کیریئر بنانے میں مصروف رہی ہوں اور انہوں نے غرور سے سوچا ہو کہ وہ مہوش حیات وہ کسی سے پیار نہیں کرسکتیں۔

اداکارہ نے بتایاکہ انہوں نے پیار اور دل کے معاملے کو انتہائی رازدانہ رکھا ہے، تاہم شاید آگے چل کر کوئی ایسا شخص ان کی زندگی میں آئے جو ان کے دل کے تالے کو کھول کر ان سے محبت کرے اور وہ بھی ان کی محبت میں ڈوب جائیں۔ساتھ ہی انہوں نے انکشاف کیا کہ وہ حقیقی زندگی میں رومانوی نہیں بلکہ وہ اسکرین پر رومانوی دکھائی دیتی ہیں۔

میزبان کی جانب سے پسندیدہ مرد کے حوالے سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ انہیں مردانہ وجاہت والے ایسے مرد پسند ہیں جن کا قد بھی لمبا ہو اور وہ بااخلاق بھی ہوں۔مہوش حیات نے وضاحت کی کہ ان کے لیے پسندیدہ مرد میں گوری چٹی رنگت ثانوی ہے تاہم دراز قد اور مردانہ وجاہت اولین ترجیح ہیں۔

اداکارہ کے جواب پر میزبان نے انہیں بتایا کہ ان کی نظر میں بلکل ایسا ہی ایک مرد ہے جو بہت مقبول اور اثر رسوخ والے بھی ہیں اور وہ پہلی بار رکن اسمبلی بھی بنے ہیں۔جس پر مہوش حیات نے کہا کہ کہیں میزبان بلاول بھٹو زرداری کی بات تو نہیں کر رہی ہیں؟جس پر میزبان نے کہا کہ اگرچہ ان کا اشارہ بلاول کی جانب نہیں تھا لیکن اگر ایسے مرد بلاول بھٹو زرداری ہیں تو اس پر مہوش حیات کو کیا پریشانی ہے؟

جس پر مہوش حیات نے مسکراتے ہوئے کہا کہ انہیں بلاول سے کوئی مسئلہ نہیں بلکہ انہوں نے بلاول کو اچھی شخصیت والا بھی قرار دیا۔مہوش حیات کے جواب پر میزبان بیگم نوازش نے اداکارہ سے پوچھا کہ اگر وہ ان کی شادی کی بات بلاول بھٹو زرداری سے چلائیں تو انہیں تو کوئی اعتراض نہیں ہوگا؟ایک اور سوال کے جواب میں مہوش حیات نے کہا کہ اگر انہیں شادی کے لیے کسی مرد کو منتخب کرنے کا کہا جائے گا تو وہ فہد مصطفیٰ کو منتخب کریں گی جب کہ انہیں کسی بوائے فرینڈ کا انتخاب کرنے کا کہا جائے گا تو ہمایوں سعید کو منتخب کریں گی۔

انٹرویو میں کیریئر کے حوالے سے بات کرتے ہوئے مہوش حیات نے بتایا کہ انہیں بھارتی فلموں میں کام کرنے کی پیش کش ہوئی تھی لیکن کیوں کہ جب سے پاکستان میں سینما کے نئے دور کا آغاز ہوا ہے، انہوں نے دوسرے ملک جاکر کام کرنے کا نہیں سوچا۔اداکارہ نے اس بات پر خوشی کا اظہار کیا کہ وہ بھی پاکستان میں سینما کے نئے دور کے آغاز کا حصہ ہیں۔ایک اور سوال کے جواب میں مہوش حیات نے انکشاف کیا کہ انہوں نے ابھی تک 28 بہاریں ہی دیکھی ہیں، یعنی ان کی عمر 28 برس ہے۔

اداکارہ نے انٹرویو میں خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کیے جانے اور می ٹو مہم پر بھی بات کی اور کہا کہ می ٹو مہم سے مرد حضرات کو ڈر ہوا ہے، تاہم ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ جنسی ہراسانی کے معاملے میں سارا قصور مرد حضرات کا نہیں ہوتا۔مہوش حیات نے واضح کیا کہ انہیں شوبز انڈسٹری میں کبھی ہراسانی کا سامنا نہیں رہا۔

https://www.instagram.com/p/CHVMj54FdY9/

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here