وفاقی وزیر برائے آئی ٹی کی جانب سے ٹک ٹاک پر عائد پابندی ہٹانے کا مشروط اعلان

0

اسلام آباد (اے ون نیوز) وفاقی وزیر برائے آئی ٹی کی جانب سے ٹک ٹاک پر عائد پابندی ہٹانے کا مشروط اعلان۔ تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر برائے آئی ٹی امین الحق کی جانب سے پاکستان میں ٹک ٹاک پر عائد پابندی ختم کیے جانے کے حوالے سے اہم اعلان کیا گیا ہے۔ وفاقی وزیر کا کہنا ہے کہ وزارت آئی ٹی کسی بھی ایسی پابندی کے خلاف ہے جو ترقی کے عمل میں رکاوٹ بنے۔

جیسے ہی ٹک ٹاک پر وموجد غیر اخلاقی مواد ہٹایا جائے گا، سوشل میڈیا ایپ پر عائد پابندی ختم کر دی جائے گی۔ وفاقی وزیر کا کہنا ہے کہ ہم نے ٹک ٹاک کو پچھلے تین ماہ میں شیئرہونے والے مواد کے حوالے سے 2 بار خبردار کیا لیکن شکایات کے ازالے کیلئے کوئی عملی قدم نہیں اٹھایا گیا۔ اب ٹک ٹاک انتظامیہ اور پی ٹی اے مل کر معاملات طے کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

وفاقی وزیر نے واضح کیا ہے کہ سوشل میڈیا پر غیر اخلاقی مواد ، نفرت انگیز تقریر یا ایسا مواد جو ریاست پاکستان کے خلاف ہو اسے ہرگز برداشت نہیں کیا جائے گا۔ بتایا گیا ہے کہ ٹک ٹاک کی انتظامیہ نے پی ٹی اے حکام سے رابطہ کیا گیا ہے۔ ٹک ٹاک انتظامیہ پاکستان میں سوشل میڈیا پر عائد پابندی کے خاتمے کیلئے حکومت پاکستان کے تمام تحفظات دور کرنے کیلئے رضامند ہے۔

ٹک ٹاک انتظامیہ نے پی ٹی اے حکام سے رابطہ کر کے تحفظات دور کرنے کی پیش کش کی ہے۔ ٹک ٹاک انتظامیہ نے کہا ہے کہ ہم پی ٹی اے سے مسلسل رابطے میں رہے ہیں اور اب بھی ان کے ساتھ کام کر رہے ہیں۔ امید ہےہے جلد پی ٹی اے کے ساتھ مل کر کسی ایسے نتیجے پر پہنچ جائے گی جس سے ٹک ٹاک ایپ پاکستان میں پھر سے کام کرنا شروع کر دے۔ مزید کہا گیا ہے کہ ٹک ٹاک سروس کی تمام مارکیٹس میں مقامی قوانین کی پابندی کے لیے پرعزم ہے ۔

ایپلی کیشن میں ایک محفوظ اور مثبت ماحول کو قائم رکھنا کمپنی کی اولین ترجیح ہے۔ ہمارے پاس ایک متحرک نظام موجود ہے جس کے تحت یقینی بنایا جاتا ہے کہ یہ پلیٹ فارم صارفین کے لیے محفوظ اورخوش گوار رہے۔ جبکہ اس حوالے سے پی ٹی اے ذرائع نے ٹک ٹاک کی طرف سے رابطے کی تصدیق کی ہے اور کہا ہے کہ اگر ایپ انتظامیہ اپنے غیر قانونی مواد کی روک تھام کا نظام بہتر کر لے تو پی ٹی اے اسے بحال کر سکتی ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here