پندرہ سالہ لڑکی نے بوائے فرینڈ سے بات کرنے سے منع کرنے پر والد کو قتل کر دیا

0

بھارت (اے ون نیوز) بوائے فرینڈ سے بات کرنے سے منع کرنے پر 15 سالہ لڑکی نے باپ کو قتل کردیا۔اس حوالے سے میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ یہ افسوسناک واقعہ بھارت میں پیش آیا جہاں ایک کم عمر لڑکی نے اپنے عاشق کے ساتھ مل کر والد کو قتل کر دیا۔پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ لڑکی کے والد کو اپنی بیٹی کے لڑکے کے ساتھ تعلقات پر اعتراض تھا جس کے بعد لڑکی نے والد کو قتل کرنے کا منصوبہ بنایا۔

نابالغ ہونے کی وجہ سے لڑکی کی شناخت خفیہ رکھی گئی ہے۔یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب متاثرہ شخص اپنے بیٹے اور بیوی کو ریلوے اسٹیشن پر اتارنے کے بعد گھر پہنچا۔ لڑکی کے والد نے 18 سال کے لڑکے کے ساتھ اپنی بیٹی کی گفتگو پر اعتراض کیا تھا اور بیٹی سے فون بھی چھین لیا تھا۔لڑکی نے والد سے انتقام لینے کے لیے دودھ کے گلاس میں زہر کی گولیاں ملا دی اور دودھ والد کو پلا دیا۔

لڑکی نے اپنے بوائے فرینڈ کے ساتھ مل کر والد کی حالت خراب ہونے کے بعد ان پر کئی وار بھی کیے۔بعد ازاں جوڑے نے مذکورہ شخص کی لاش کو آگ لگا دی۔بنگلے سے دھواں اٹھتے دیکھ کر پڑوسیوں نے پولیس اور فائر بریگیڈ کو اطلاع دی۔ بنگلے میں داخل ہونے پر پولیس کو مالک کی لاش ملی۔جوڑا پولیس کے آنے کے موقع پر موجود تھا ،دونوں کی طرف ست پولیس کو متضاد بیانات دیئے گئے۔

جس کے بعد قانون نافذ کرنے والے ادارے کے اہلکاروں کے ذہن میں شک پیدا ہوا۔لڑکی نے مزید تفتیش کرنے پر اپنا جرم قبول کر لیا۔بھارتی میڈیا کے مطابق پندرہ سالہ لڑکی نے پولیس کو بتایا کہ اس نے اپنے والد کو اس لئے مارا کیونکہ وہ اپنی آزادی واپس چاہتی تھی۔لڑکی کا کہنا ہے کہ بوائے فرینڈ سے ملنے پر والد نے مجھ پر تشدد بھی کیا اور موبائل استعمال کرنے پر پابندی بھی عائد کر دی تھی۔پولیس نے دونوں ملزمان کو اپنی تحویل میں لے لیا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here