چیکنگ کی آڑ میں مستند معالجین کی تذلیل قابل مذمت ہے،حکیم محمد شفیع طالب قادری

0

لاہور(اے ون نیوز)ہومیو ڈاکٹرز اور حکماءبرادری کے ساتھ تعصبانہ رویہ کسی طور بھی قابل قبول نہیں ، مستند معالجین کے مطبوں پر چیکنگ کی آڑ میں چھاپہ مار ٹیموں کی غنڈہ گردی ناقابل قبول ۔

ان خیالات کا اظہار چیئرمین متحدہ تجدید طب کونسل حکیم محمد شفیع طالب قادری نے جڑانوالہ میں ایک مستند طبیب کے مطب پر دوران چیکنگ چھاپہ مار ٹیم کی طرف سے غیر پیشہ وارانہ رویہ کے رد عمل کے طور پر کیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ ہم عطائیت کے خاتمہ کیلئے اٹھائے گئے تمام مثبت اقدامات کی بھرپور تائید کرتے ہیں مگر متعلقہ عملہ کو مستند معالجین کے وقار کو مجروح کرنے کی ہرگز اجازت نہیں دیں گے ۔ حکمت ایک فن شریف ہے جس سے منسلک اطباء مناسب حکومتی سرپرستی نہ ہونے کے باوجود بھی پاکستان میں اپنی طبی و تحقیقی صلاحیتیوں کو بروئے کار لاتے ہوئے بیمار دکھی انسانیت کی خدمت میں مصروف عمل ہیں ۔

دوران چیکنگ ایک مستند معالج کے ساتھ محکمہ صحت کے نمائندوں کی طرف سے ہونے والا برتاﺅ اس کی عزت نفس مجروح کرنے کے مترادف ہے جسکی کسی صورت بھی اجازت نہیں دی جائے گی ۔ بلاشبہ عطائیت کسی رعائیت کی مستحق نہیں مگر دانستہ طور پر طب یونانی کے معالجین کے ساتھ تعصبانہ رویہ ناقا بل قبول ہے اور ہم اس کے جواب میں قانونی چارہ جوئی کا اختیار رکھتے ہیں ۔ محکمہ صحت کے متعلقین کی طرف سے ایسے واقعات کا سخت ترین نوٹس نہ لینے تک ہمارا احتجاج جاری رہے گا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here