لندن،معروف مصنف افضل چودھری کی کتاب”میں اور تم“ کی تقریب آگاہی

0

لندن(اے ون نیوز)سینٹرل لندن قلم کاروں کے جھرمٹ میں انسان تہذیب اور مذاھب پر بحث کرنے والی معروف مصنف افضل چودھری کی کتاب”میں اور تم“ کی تقریب أگاھی منعقد ھوئی۔

جہاں ھمارے معاشرے میں کتاب لکھنے اور اس کی اہمیت کو سمجھنے والے لوگوں میں خاصی کمی أ رھی ھے وہاں جرمنی جیسے ترقی یافتہ ممالک اپنے دانشوروں کے اصرار اور کتاب کی افادیت بڑھانے کے لئے اپنے ٹیلیفون بوتھ تک لائبریریوں میں تبدیل کر رھے ہیں۔ البتہ اس سوشل میڈیا اور گیجٹس کے دور میں بھی مادہ پرستی کو بالائے طاق رکھتے ھوئے پاکستانی لکھاری کسی سے کم نہیں ہیں۔

روئے زمین پر انسان کی تخلیق۔ تہذیب و ثقافت کے پرچار اور مذاھب کے ظہور جیسے فلسفے پر کام کرنے والے تخلیق کار أج بھی اپنے فرائض سے غافل نہیں ہیں۔ ” میں اور تم ” ایک ایسی ھی کتاب ھے جو انسانی تخلیق کے فلسفے کے بعد کبھی بابل(عراق) کی تہذیب کو زیر بحث لاتی ھے تو کبھی دریائے سندھ ( مونجھوداڑو) کی تہذیب و ثقافت اور اس کے مذاھب پر سیر حاصل گفتگو کرتی ھے۔

” میں اور تم ” ایک طرف انسان تہذیب و مذاھب کے کرونیکل آرڈر کو ملحوظ خاطر رکھتی ھے تو دوسری طرف سائنسی مندرجات کو زیر بحث لاتے ھوئے الہامی کتابوں کے حوالہ جات بڑے مدلل انداز میں پیش کرتی ھے۔

کتاب کے مصنف افضل چوھدری نے کہا کہ فنون لطیفہ ۔ ادب ۔ اور قلمی تخلیق کاروں کے شہہ پاروں سے ھی أنے والی نسلوں کو موٹیویشن ملتی ھے اور قوموں میں ھم أھںگی کا عنصر نمایاں رھتا ھے۔

صدارتی ایوارڈ یافتہ اور60 سے زائد کتابوں کے مصنف شریف بقا نے کہا کہ اب ھم مایوس نہیں ہیں کیونکہ افضل چوھدری جیسے قلم کار ھمارے أنے والے معاشرے کا حصہ بن رھے ہیں۔ پروفیسرعقیل دانش نے کہا کہ جب تک ھمارے معاشرے میں تحقیق کار جنم لیتے رہیں گے ھم اس معاشرے سے مایوس نہیں ھو سکتے۔ کتاب میں اور تم زندگی کے فلسفے سے بھرپور ایک انتہائی اھم کاوش ھے۔

تقریب میں قاضی عبدالروف۔ تنویر زمان۔ احسان شاھد جیسے لکھاریوں کے علاوہ بیرسٹر راشد اسلم بیرسٹر میاں وحید۔ بیرسٹر شہزادہ حیات کے ساتھ لندن میں پاکستانی کمیونٹی کے سولیسٹرز اور بزنس سے وابسطہ شخصیات نے شرکت کی۔


LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here